1. This site uses cookies. By continuing to use this site, you are agreeing to our use of cookies. Learn More.
  2. آپس میں قطع رحمی نہ کرو، یقینا" اللہ تمہارا نگہبان ہے۔یتیموں کا مال لوٹاؤ، اُن کے اچھے مال کو بُرے مال سے تبدیل نہ کرو ۔( القرآن)

  3. شرک کے بعد سب سے بڑا جرم والدین سے سرکشی ہے۔( رسول اللہ ﷺ)

  4. اگر تم نے ہر حال میں خوش رہنے کا فن سیکھ لیا ہے تو یقین کرو کہ تم نے زندگی کا سب سے بڑا فن سیکھ لیا ہے۔(خلیل جبران)

نگاہ یارسے نکلوں تو کوئی بات کروں

'میری شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از سیدعلی رضوی, ‏نومبر 14, 2017 at 12:35 PM۔

  1. سیدعلی رضوی

    سیدعلی رضوی یونہی ہمسفر

    نگاہ یارسے نکلوں تو کوئی بات کروں

    میں اِس حصار سے نکلوں تو کوئی بات کروں


    مری خموشی تشکر کی اک علامت ہے

    میں تیرے پیار سے نکلوں تو کوئی بات کروں


    جو ایک وار سی تیری نگاہ قاتل ہے

    اس ایک وار سے نکلوں تو کوئی بات کروں


    رچاہے عشق جو میری تمام ہستی میں

    میں اس دیار سے نکلوں تو کوئی بات کروں


    قرار گاہ تخیل میں وجد آور رخ

    مٰیں اس مزار سے نکلوں تو کوئی بات کروں


    مہک سے جس کی مرے پور پور ہیں مسحور

    اس آبشار سے نکلوں تو کوئی بات کروں
     

اس صفحے کو مشتہر کریں