1. This site uses cookies. By continuing to use this site, you are agreeing to our use of cookies. Learn More.
  2. آپس میں قطع رحمی نہ کرو، یقینا" اللہ تمہارا نگہبان ہے۔یتیموں کا مال لوٹاؤ، اُن کے اچھے مال کو بُرے مال سے تبدیل نہ کرو ۔( القرآن)

  3. شرک کے بعد سب سے بڑا جرم والدین سے سرکشی ہے۔( رسول اللہ ﷺ)

  4. اگر تم نے ہر حال میں خوش رہنے کا فن سیکھ لیا ہے تو یقین کرو کہ تم نے زندگی کا سب سے بڑا فن سیکھ لیا ہے۔(خلیل جبران)

اللہ والوں کے رنگ

'حاصل ِ مطالعہ' میں موضوعات آغاز کردہ از جوگی, ‏دسمبر 20, 2013۔

  1. جوگی

    جوگی منتظم Staff Member

    کُچھ اللہ والے ایسے ہوتے ہیں جن کا باوا آدم ہی نِرالا ہوتا ہے۔ یہ بظاہر حدودِ شریعت سے باہر نظر آتے ہیں۔ ان میں ہر وہ عِلّت، حد اور حرکت دکھائی دیتی ہے جو کسی کو فاسِق، فاجر اور فارغ و فاتر الدین و دُنیا کہلانے کے لئے کافی ہوتی ہے۔ ان کے پیشِ نظر شاید یہ ہوتا ہے کہ ہر وہ عمل کرو جو اچھائی، نیکی اور راستی کی ضد ہو تاکہ تم دُنیا کے شر اور نگاہوں سے خود کو بچا سکو۔ یعنی ناپسندیدہ کام و حرکات کا ارتکاب کرو اور اچھائیاں، نیکیاں، بھلائیاں، دیگر عبادات کو پردہء نہاں میں رکھو تاکہ تکبّر، غرور، دکھاوے اور ریا کی غلاظت سے محفوظ رہ سکو۔ کسی کو دکھانے کے لئے نمازیں مت پڑھو۔ نیکیاں، بھلائیاں اس لئے مت کرو کہ لوگ تمہیں مخیّر اور برگزیدہ کہیں۔ تسبیح، داڑھیاں، ماتھے کے نشان مت اچھالو۔ یہ سب چُھپانے کی چیزیں ہیں، انہیں خالص اپنے اللہ کے لئے رکھو کہ وہی سب عبادتوں، تعریفوں، تعظیموں اور تکریموں کے لائق ہے ۔۔۔ قتیل کہتے ہیں ۔ ۔ ۔

    دِل میں رکھنے کی چیز ہے غمِ عشق
    اس کو ہرگز نہ بَر ملا کہیئے

    جیسے اگر کسی کو خیرات زکٰوۃ دو، کسی کی مدد کرو تو ایسے کہ دوسرے ہاتھ کو خبر نہ ہو۔ کسی پہ احسان کرو تو جتاؤ مت، ایسا نہ ہو کہ تم اجر سے محروم کر دیئے جاؤ۔ لوگوں پہ احسان کرو تاکہ کَل وہ مالکِ کُل تم بھی پہ احسان کرے۔ بھوکوں کو کِھلانا، پیاسوں کو پانی، مستحق حاجت مندوں کی حاجت روائی، یتیموں کے سروں پہ ہاتھ رکھو۔ خدمت اور عزت کرنے والوں پہ مہربان رہو تاکہ تم دین و دُنیا میں فلاح پاؤ، بےشک وہ نیّتوں کی ساری کیفیتوں کا جاننے والا ہے۔ یہ ملامتی لوگ بظاہر ایسی حرکتیں کرتے ہیں کہ دیکھنے والا ان کے بارے میں اچھی رائے قائم نہیں کرتا۔ بظاہر مست، نشے میں دُھت، بے نمازی، گندے پلید اور جاہل و کاہل دکھائی دیتے ہیں مگر خبر دار رہو کہ یہ بڑے دانا اور اندر سے بڑے گُپت ہوتے ہیں۔ ان سے زیادہ عقلمند، ہوشیار، دانا اور کون ہوگا کہ دُنیا انہیں کچھ بھی کہے، سمجھے یا جانے مگر وہ اپنے ربّ کے معاملے میں بڑے مُخلص ہوتے ہیں۔ وہ دُنیا کی برائیاں دُنیا والوں کو ہی لوٹا کر اور ان سے اپنے لئے لعن طعن لے کر بڑے خوش ہوتے ہیں تاکہ بُری دُنیا انہیں بُرا کہے اور اچھا مالک و خالق ان سے راضی رہے۔ یہ حالِ مست، اعمالِ مست، ہست مست، الست مست کچھ مشاہدہء ذات میں ڈُوبےہوئے ہوتے ہیں ، کچھ مظاہرِ کائنات میں مگن ہوتے ہیں اور کچھ مشاہدہء حق میں حق ہُو ہوتے ہیں۔ ان مقامات اور مدارج پہ دُنیا ان کے لئے ایک پُشہ کے برابر بھی حیثیّت نہیں رکھتی چہ جائیکہ وہ دُنیا کو دیکھیں اور دنیا داروں کی پرواہ کریں۔

    پِیا رنگ کالا از بابا محمد یحیٰی خان
    صفحہ نمبر 283
     
  2. حامدسلطان

    حامدسلطان یونہی ہمسفر

    یہ جس مصنف کا حوالہ آپ نے دیا ہے ان کے متعلق اگر کچھ بتا دیں
     
  3. زبیر

    زبیر منتظم Staff Member

    جی جوگی بابا... مصنف کے حالات پر بھی اگر کچھ بات ہو جائے تو واقعی اقتباس زیادہ پر اثر ہو جائے گا.
     
  4. بینا

    بینا مدیر Staff Member

    اللہ کی اس رنگ برنگی دنیا میں کیسے کیسے پر اسرار لوگ کیسے کیسے راز اپنے سینے میں رکھتے ہیں
    رب کے بھید رب جانے یا جس پہ گزرے، وہ جانے ....... ہماری آنکھیں ان گہرے لوگوں کی گرد کو بھی نہیں پاسکتیں
     
  5. جوگی

    جوگی منتظم Staff Member

    بابا محمد یحیی خان بہت ہی مشہور و معروف شخصیت ہیں
    مجھے حیرت ہوئی کہ ان سے ناوقف بھی کوئی ہو سکتا ہے

    کاجل گھر ، پیارنگ کالا ان کی بہت ہی مشہور کتابیں ہیں
    تفصیلی تعارف اور ان کی تصاویر انشاءاللہ نشرط فرصت اور بشرط بجلی ایک تحریر کے ذریعے یونہی کی زینت بنا دوں گا
     

اس صفحے کو مشتہر کریں