1. This site uses cookies. By continuing to use this site, you are agreeing to our use of cookies. Learn More.
  2. آپس میں قطع رحمی نہ کرو، یقینا" اللہ تمہارا نگہبان ہے۔یتیموں کا مال لوٹاؤ، اُن کے اچھے مال کو بُرے مال سے تبدیل نہ کرو ۔( القرآن)

  3. شرک کے بعد سب سے بڑا جرم والدین سے سرکشی ہے۔( رسول اللہ ﷺ)

  4. اگر تم نے ہر حال میں خوش رہنے کا فن سیکھ لیا ہے تو یقین کرو کہ تم نے زندگی کا سب سے بڑا فن سیکھ لیا ہے۔(خلیل جبران)

--------(ہیجان)-------------

'میری شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از سیدعلی رضوی, ‏جولائی 5, 2018۔

  1. سیدعلی رضوی

    سیدعلی رضوی یونہی ہمسفر

    آنکھیں ہیں خواب ہیں خواب ہیں چور ہیں
    خواب کی کرچیاں چور تھیں چور ہیں
    ساتھ ہے سانس کا ہجر ہے وصل میں
    پاس بیٹھا ہوں میں آپ ہیں دور ہیں
    ہیں شکستہ بہت خواب اور میرا تن
    خواب کا اک جہاں آپ سے دوری پر
    سخت رنجور ہے ہم ہیں مجبور ہیں
    آپ کی دلکشی دے گئی روشنی
    نار ہی نار تھے نور ہی نور ہیں
    آپ ہیں پاس ہی پاس ہیں دور ہیں
    ہم سے شکوہ ہے کیا کیا ہے کوئی گلہ
    بات تو کچھ کریں یوں نہ آگے بڑھیں
    جھک گئی ہے نظر پاس رکھیں مرا
    ٹوٹی سڑکوں سا دل رکتا چلتا ہے یہ
    یاد کے گڑھوں میں رک سا جاتا ہے دل
    سوچ میں آپ کی ڈوب جاتا ہے دل
    تھک گیا ہے بہت کب سے چلتا رہا
    اک تخیل کی دنیا میں ڈھلتا رہا
    سیر کرتے رہا اور مچلتا رہا
    دیکھیۓ تو سہی آپ میری طرف
    خواب امید کی کھونٹی سے لٹکےہیں
    کس کو دیکھیں گے ہم آپ کو تکتے ہیں
    آپ ایقان ہیں آپ پر مان ہے
    آپ کے ہونے سے غم تھے کافور ہیں
    آپ کے خواب ہیں آپ سے دور ہیں
    آنکھیں ہیں خواب ہیں خواب ہیں چور ہیں
    خواب کی کرچییاں چور تھیں چور ہیں
     
    Last edited: ‏جولائی 7, 2018

اس صفحے کو مشتہر کریں