1. This site uses cookies. By continuing to use this site, you are agreeing to our use of cookies. Learn More.
  2. آپس میں قطع رحمی نہ کرو، یقینا" اللہ تمہارا نگہبان ہے۔یتیموں کا مال لوٹاؤ، اُن کے اچھے مال کو بُرے مال سے تبدیل نہ کرو ۔( القرآن)

  3. شرک کے بعد سب سے بڑا جرم والدین سے سرکشی ہے۔( رسول اللہ ﷺ)

  4. اگر تم نے ہر حال میں خوش رہنے کا فن سیکھ لیا ہے تو یقین کرو کہ تم نے زندگی کا سب سے بڑا فن سیکھ لیا ہے۔(خلیل جبران)

گماں کے اینٹوں کی یہ عمارت تمہاری جنت بری نہیں ہے

'میری شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از سیدعلی رضوی, ‏اگست 15, 2018۔

  1. سیدعلی رضوی

    سیدعلی رضوی یونہی ہمسفر

    گماں کے اینٹوں کی یہ عمارت تمہاری جنت بری نہیں ہے
    اگرچہ تعمیر ہوچکی تھی پہ یہ مرمت بری نہیں ہے

    اگر سہولت ہے یہ صورت تو یہ سہولت بری نہیں ہے
    نگہ کو اب تک جچی نہیں ہے مگر یہ صورت بری نہیں ہے

    سکونِ صحرا جو دے رہا ہے وہ گھر تو ہرگز بر انہیں ہے
    جو تم کو گھر تک ہی لارہی ہے تمہاری وحشت بری نہیں ہے

    کوئی دوانہ بنا منارہ تو کچھ غبارِ رہ ہی ہیں اب تک
    دوانے پھر بھی یہ کہہ رہے ہیں یہ راہ ِ الفت بری نہیں ہے

    یہ گل جو خاور سے لڑ رہا ہے یہ لحظہ لحظہ پگھل رہا ہے
    لطیف جسمی کی یہ جسارت ہے تو حماقت بری نہیں ہے

    حسین رخ پر سیاہ زلفیں نسیم سحری کے سنگ ظلمت
    ہوصبحِ روشن کے سنگ ظلمت تو پھر یہ ظلمت بری نہیں ہے

    ارے نہیں یہ حسین دلکش وہ کہنہ شاطرگھمنڈی سرکش
    ڈرو نہیں یہ بھلی بہت ہے یہ خوبصورت بری نہیں ہے

    تو ورد و تسبیح میں لگا ہے تو تھوڑا تھوڑا بدل رہا ہے
    خدا سے تجھ کو ملا رہی ہے تری محبت بری نہیں ہے

    جہیز جیسی قبیح لعنت ملے کسی کو تو طعن اس پر
    ملے جو خود یہ حسین تحفہ تو پھر یہ لعنت بری نہیں ہے

    جو سچ لگے گا میں سچ کہوں گا جو جھوٹ ہے وہ توجھوٹ ہی ہے
    بری لگی ہے مری یہ عادت مگر یہ عادت بری نہیں ہے

    یہ کلفتیں ہیں حلال ہم پر ملن کی راحت ملے جو ہم کو
    ملیں گے ہم کو یقیں دلانا تو یہ قیامت بری نہیں ہے
    ----------------------------------------------------
    ابو لویزا علی
     
    زبیر نے اسے پسند کیا ہے۔
  2. زبردست۔ بہت اعلیٰ جناب۔
    تالیاں۔ :)
     
    سیدعلی رضوی نے اسے پسند کیا ہے۔

اس صفحے کو مشتہر کریں