1. This site uses cookies. By continuing to use this site, you are agreeing to our use of cookies. Learn More.
  2. آپس میں قطع رحمی نہ کرو، یقینا" اللہ تمہارا نگہبان ہے۔یتیموں کا مال لوٹاؤ، اُن کے اچھے مال کو بُرے مال سے تبدیل نہ کرو ۔( القرآن)

  3. شرک کے بعد سب سے بڑا جرم والدین سے سرکشی ہے۔( رسول اللہ ﷺ)

  4. اگر تم نے ہر حال میں خوش رہنے کا فن سیکھ لیا ہے تو یقین کرو کہ تم نے زندگی کا سب سے بڑا فن سیکھ لیا ہے۔(خلیل جبران)

فردِ واحد

'گوشہ ءِ ادب' میں موضوعات آغاز کردہ از عماد عاشق, ‏مارچ 28, 2017۔

  1. عماد عاشق

    عماد عاشق یونہی ہمسفر

    بسا اوقات مجھے وہ شخص یاد آتا ہے جو ایک نو آبادی کی آزادی کے لیے بہادری سے لڑا اور اس کی ایک ٹانگ ضائع ہو گئی۔ وہ قومی ہیرو بن گیا مگر جنگ طویل تھی اور جاری رہی۔ یہی ہیرو اس اثناء میں ایسا بدلا کہ دوسری طرف جا ملا اور ملک کے خلاف لڑتا ہوا مارا گیا۔ جنگ نو آبادی نے جیت لی۔ اب قومی ہیرو کے صحیح مقام کے تعین کا سوال تھا۔ طے پایا کہ اس کا ایک مجسمہ نصب کیا جائے۔ مگر وہ صرف ایک ٹانگ پر مشتمل ہو جو آزادی کی راہ میں کٹی تھی۔ ایک ٹانگ کا یہ مجسمہ عبرت کا بہت بڑا سبق ہے۔ اگر پاکستان میں مجسمہ سازی جائز ہوتی اور تحریکِ پاکستان کے سلسلے میں مجسمے بنائے جاتے تو اس جگہ پر علم الاعضاء کے عجائب گھر کا گمان گزرتا۔ ایک فردِ واحد کے علاوہ کسی اور کا بت وقت کے ہاتھوں سلامت نہ رہتا۔ اس فردِ واحد کو یاد کرتاہوں تو خیال آتا ہے کہ عقیدہ عمارت سے زیادہ پائیدار ہوتا ہے اور انسان مینار سے کہیں زیادہ قد آور ہوتا ہے۔

    ؎ خلل پذیر بُود ہر بنا کہ می بینی

    مگر بنائے محبت کہ خالی از خلل است

    ترجمہ: انجام کار ہر عمارت نے درہم برہم اور تباہ ہو جانا ہے سوائے اس کے جس کی بنیاد محبت پر رکھی جائے۔



    اقتباس: آواز ِ دوست

    مصنف: استاذِ محترم جناب مختار مسعود صاحب
     
    عمراعظم, جوگی, رانا احسان اور مزید ایک رکن نے اسے پسند کیا ہے۔
  2. زبیر

    زبیر منتظم Staff Member

    بہت خوب @عماد عاشق بھائی ۔۔
    مزید کا انتظار رہے گا
     
    عمراعظم، جوگی اور عماد عاشق نے اسے پسند کیا ہے۔
  3. رانا احسان

    رانا احسان یونہی ہمسفر

    فرد واحد کی عظمت کو سلام ھے..
     
    عمراعظم، جوگی اور عماد عاشق نے اسے پسند کیا ہے۔
  4. عمراعظم

    عمراعظم یونہی ایڈیٹر Staff Member

    انعامِ تو بر دوختہِ چشم و دہن آز
    احسانِ تو بشگافتہِ ہر قطرہ یم را

    تیری عطا و بخشش سے جو نعمتیں حاصل ہوئیں اُنہوں نے لالچ کے دہن اور حرص کی آنکھ بند کر دی ہے۔
    تیرے احسان نے تو سمندر کے ہر قطرے کا منہ کھول دیا ہے (تا کہ اُس سے موتی نکلے)
     
    عماد عاشق نے اسے پسند کیا ہے۔
  5. علی مجتبیٰ

    علی مجتبیٰ مدیر Staff Member

    بہت بہت شکریہ
     

اس صفحے کو مشتہر کریں