1. This site uses cookies. By continuing to use this site, you are agreeing to our use of cookies. Learn More.
  2. آپس میں قطع رحمی نہ کرو، یقینا" اللہ تمہارا نگہبان ہے۔یتیموں کا مال لوٹاؤ، اُن کے اچھے مال کو بُرے مال سے تبدیل نہ کرو ۔( القرآن)

  3. شرک کے بعد سب سے بڑا جرم والدین سے سرکشی ہے۔( رسول اللہ ﷺ)

  4. اگر تم نے ہر حال میں خوش رہنے کا فن سیکھ لیا ہے تو یقین کرو کہ تم نے زندگی کا سب سے بڑا فن سیکھ لیا ہے۔(خلیل جبران)

برپا دل نے فساد رکھا ہے

'میری شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از سیدعلی رضوی, ‏جون 21, 2018۔

  1. سیدعلی رضوی

    سیدعلی رضوی یونہی ہمسفر

    برپا دل نے فساد رکھا ہے
    نام اس کا جہاد رکھا ہے

    پارسا ہیں جو درگز رکرتے
    ہم نے دل میں عناد رکھا ہے

    کی ہےروشن جو شمع نو امید
    خود اسے دوشِ باد رکھا ہے

    غم کی کھیتی سے اپنے چہرے کو
    سبز رکھا ہے شاد رکھا ہے

    بیٹھا جاتا ہے دل کہ ہم نے بوجھ
    سارا اس دل پہ لاد رکھا ہے

    اچھے شعروں پہ دل نہیں آتا
    اچھے چہروں پہ داد رکھا ہے

    دلہنیں بستی نہیں تو شہر کا نام
    کیوں عروس البلاد رکھا ہے

    ابو لویزا علی
     

اس صفحے کو مشتہر کریں